29/05/2023

ہم سے رابطہ کریں

کراچی :گورنر سندھ عمران اسماعیل نے امریکی قونصل جنرل مارک اسٹرو کے ہمراہ آج 220 کے وی گرڈ اسٹیشن جھمپیر-I کا افتتاح کیا۔ گورنر سندھ نے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ کی یہ سرمایہ کاری پاکستان کے قومی گرڈ میں ونڈ پاور پلانٹس سے پیدا ہونے والی 780 میگاواٹ صاف توانائی کا اضافہ کرے گی۔ گورنر سندھ نے یو ایس ایڈ کی جانب سے پاکستان کے پاور سیکٹر میں تعاون اور مالی معاونت کو سراہتے ہوئے ملک میں صاف ستھری بجلی کی پیداوار کے مقصد کو فروغ دینے کے لیے سرکاری اور نجی شعبوں کے درمیان زیادہ سے زیادہ رابطے اور مکالمے کی ضرورت پر زور دیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ "ونڈ انرجی صاف، ماحول دوست اور تیل سے چلنے والی بجلی کے مقابلے سستی ہے، لہذا اس شعبے میں نجی شعبے کی شرکت سے توانائی کے مجموعی مرکب میں اس کا حصہ بڑھانے میں مدد ملے گی”۔ گورنر سندھ نے کہا کہ یو ایس حکومت نے یو ایس ایجنسی فار انٹرنیشنل ڈویلپمنٹ (USAID) کے ذریعے سندھ کے ضلع ٹھٹھہ کے جھمپیر ونڈ کوریڈور میں ٹرانسمیشن لائنوں اور ایک گرڈ اسٹیشن کی تعمیر کی کوشش میں تعاون کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یو ایس ایڈ کی اس بڑی مدد سے نجی شعبے کی ہوا سے بجلی پیدا کرنے والی کمپنیاں اب نیشنل گرڈ کو بجلی فروخت کر رہی ہیں۔ گورنر سندھ نے کہا کہ یہ کامیابی ظاہر کرتی ہے کہ اسٹریٹجک حکومتی تعاون سے توانائی کا شعبہ مقامی اور قومی اقتصادی ترقی کا محرک ثابت ہو سکتا ہے۔گورنر سندھ نے مذید کہا کہ یہ بات قابل ذکر ہے کہ 2010 سے یو ایس ایڈ نے قومی گرڈ میں 3,900 میگاواٹ سے زیادہ کا اضافہ کرنے کے لیے حکومت پاکستان کے ساتھ شراکت داری کی ہے اور اس سرمایہ کاری سے 47 ملین سے زائد پاکستانی مستفید ہو رہے ہیں۔
ڈی ایم ڈی، این ٹی ڈی سی محمد ایوب نے کہا کہ این ٹی ڈی سی نے نیشنل گرڈ میں گرین انرجی شامل کرنے کے لیے منسلک ٹرانسمیشن لائنوں کے ساتھ 220 کے وی گرڈ اسٹیشن جھمپیر-I کی تعمیر پر بھرپور طریقے سے کام کیا ہے اور اس وقت 15 ونڈ پاور پلانٹس گرڈ اسٹیشن سے منسلک ہیں۔

Share            News         Social       Media